امریکہ نے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دیکر بین الاقوامی حیثیت کو پامال کیا، محمود عباس

فلسطینی صدر محمود عباس نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ نے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دیکر بین الاقوامی حیثیت کو پامال کیا ہے۔

امریکہ نے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دیکر بین الاقوامی حیثیت کو پامال کیا، محمود عباس

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، فلسطینی صدر محمود عباس نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں منگل کے روز تقریر کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ نے بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت قرار دیکر بین الاقوامی حیثیت کو پامال کیا ہے۔

انہوں نے اسرائیل پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل نے مذاکرات کی بحالی کے لیے تمام کوششوں کو ناکام بنا دیا ہے اور وہ بطور ریاست قانون سے بالا تر اقدامات کررہا ہے۔

محمود عباس نے اپنی تقریر میں 2018ء کے وسط میں بین الاقوامی مشرقِ وسطیٰ امن کانفرنس بلانے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ مشرقِ وسطیٰ کے وسیع تر امن عمل کے تحت بیت المقدس دارالحکومت کے ساتھ فلسطینی ریاست کو تسلیم کیا جائے۔

محمود عباس کا کہنا تھا کہ  القدس کو فلسطین کا دارالحکومت ہونا چاہیے اور یہ تمام مذاہب کے پیروکاروں کے لیے کھلا ہونا چاہیے۔

انھوں نے کہا کہ امریکا اب بھی مزاحمتی تحریک کو ایک دہشت گرد تنظیم سمجھتا ہے اور اس کے کام میں روڑے اٹکاتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وہ اقوام متحدہ میں فلسطینی ریاست کی مکمل رکنیت کے لیے اپنی کوششوں میں تیزی لائیں گے اور بین الاقوامی تحفظ کے حصول کی بھی کوشش کریں گے۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی اسلامی بیداری خبریں
اہم ترین اسلامی بیداری خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری