پاکستان تابکاری مواد کی نقل و حرکت کیلئے عالمی قوانین کا پاسدار

دفتر خارجہ نے بتایا ہے کہ پاکستان نے عالمی ادارہ برائے جوہری توانائی انٹرنیشنل اٹامک انرجی ایجنسی (آئی اے ای اے) کو یقین دہانی کرائی ہے کہ وہ تابکاری مواد کی نقل و حرکت یا درآمد و برآمد کے لیے واضع کردہ عالمی قوائد و ضوابط کی پاسداری پر عملدرآمد کرتا رہا ہے۔

پاکستان تابکاری مواد کی نقل و حرکت کیلئے عالمی قوانین کا پاسدار

خبررساں ادارے تسنیم کے مطابق عالمی دنیا میں تابکاری مواد کی ایک ریاست سے دوسری ریاست میں منتقلی کے لیے ‘سیفٹی اینڈ سیکیورٹی’ پر مشتمل ضباطہ اخلاق ہے جس کی پابندی قانونی طور پر لازمی نہیں لیکن تابکاری مواد کی درآّمد و برآمد کے دوران گلبول نیوکلئر سیفٹی کو یقینی بنانا ذمہ دار جوہری ملک کی پہنچان ہے۔

دفترخارجہ نے بدھ کو پریس بریفنگ میں بتایا کہ تابکاری مواد کے عدم پھیلاؤ اور تحفظ کے لیے پاکستان طے شدہ عالمی معیارات کی حوصلہ افزائی کرتا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان گزشتہ 2005 سے تابکاری مواد کی نقل و حرکت کے حوالے سے قوائد و ضوابط پر رضا کارانہ طور پر عمل پیرا ہے اور قوائد کی پاسداری کو یقینی بناتا ہے۔

ڈان نیوز کے مطابق تابکاری مواد کی درآمد و برآمد سے متعلق گائیڈ لائنز پرعمل پیرا ہو کر دونوں ممالک کو یقین رہتا ہے کہ تابکاری مواد محفوظ ہاتھوں سے نکل کر اپنی منزل پر پہنچا ہے۔

دفتر خارجہ نے بتایا کہ ‘تابکاری مواد کی نقل و حرکت میں ضمی گائیڈلائنز کو سختی سے اپنانے کا مقصد قومی مفاد سمیت عالمی ممالک کا اعتماد حاصل کرنا ہے’۔

انہوں نے بتایا کہ پاکستان اپنا جوہری پروگرام گزشتہ 4 دہائیوں سے محفظ اور پر امن مقاصد کے لیے چلا رہا ہے اور گزشتہ کئی برسوں سے پاکستانی ماہرین بھی آئی اے ای اے کے ساتھ مل کر جوہری اثاثوں کے تحفظ اور عدم پھیلاؤ کے لیے کوشاں ہیں۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری