بھارت کا مقبوضہ کشمیر میں اپنی بربریت چھپانے کیلئے نیا پروپیگنڈہ

بھارتی حکام مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں پر جاری مظالم کو ایسی حالت میں چھپانے کیلئے ایک نئے پروپیگنڈے کا راگ الاپ رہے ہیں کہ وادی میں جاری مزاحمت کے ثبوت تصاویر اور ویڈیوز کی شکل میں عالمی میڈیا کی زینت بنتے آرہے ہیں۔

بھارت کا مقبوضہ کشمیر میں اپنی بربریت چھپانے کیلئے نیا پروپیگنڈہ

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق بھارتی حکومت نے مقبو ضہ کشمیر میں مظلوم کشمیریوں پر جاری اپنے بدترین مظالم پر پردہ ڈالنے اور دنیا کی آنکھوں میں دھول جھونکنے کےلئے پاکستان کی جانب سے مجاہدین کی درانداز ی کاجھوٹا پروپیگنڈا شروع کردیا ہے اور اس مقصد کیلئے بھارتی میڈیا کو بری طرح استعمال کیا جا رہاہے۔

بھارتی نشریاتی ادارے کی گمراہ کن رپورٹ کے مطابق لشکر طیبہ کے 35مجاہدین اس وقت جموں کشمیر میں چار مختلف سمتوں سے دراندازی کرنے کے لئے منصوبہ بندی کر چکے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق بھارتی کی خفیہ ایجنسی نے رپورٹ کیا ہے کہ 18مجاہدین لائن آف کنٹرول پر شاردی کے مقام پر دراندازی کریں گے جبکہ 8لیپا سے دراندازی کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 6مجاہدین پونچھ کے مخالف کالودی ڈھیری پر نظریں جمائے ہوئے ہیں جبکہ 3تین مجاہدین کوٹلی کے راستے مقبوضہ وادی میں داخل ہونگے۔

اس رپورٹ میں حسب سابق پاک فوج کے خلاف ہرزہ سرائی کرتے ہوئے یہ الزام بھی عائد کیا گیا ہے کہ لشکر طیبہ کے ان مجاہدین کو باڈر کراس کرنے کیلئے پاک فوج کی جانب سے کور فائر فراہم کیاجائے گا۔

بھارتی میڈیا کی اس بے بنیاد  رپورٹ کے مطابق رمضان میں بھارتی حکومت کی جانب سے کی گئی جنگ بندی کی وجہ سے مجاہدین کو ازسرنو منظم ہونے کاموقع مل گیا ہے۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی دنیا خبریں
اہم ترین دنیا خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری