نیا پاکستان خود دار اور اپنے پیروں پر کھڑا ہوگا، عمران خان

تحریک انصاف کے چیئرمین نے کہا کہ ہمارا سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ ملک چلانے کیلئے پیسہ نہیں ہے، ملک کو گھر کی طرح سمجھیں گے تو یہ ملک خود دار اور اپنے پیروں پر کھڑا ہوگا۔

نیا پاکستان خود دار اور اپنے پیروں پر کھڑا ہوگا، عمران خان

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے عمران خان کے آبائی علاقے میانوالی سے انتخابی مہم کا باضابطہ آغاز کردیا۔

میانوالی میں منعقدہ انتخابی جلسے سے خطاب میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا کہ ’نیا پاکستان خود دار ہوگا، اپنے پیروں پر کھڑا ہوگا، ہمارا سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ ملک چلانے کیلئے پیسہ نہیں ہے، ملک کو گھر کی طرح سمجھیں، ایف آئی اے کو مضبوط ادارہ بنائیں گے، پولیس کو ٹھیک کریں گے، تعلیمی ایمرجنسی نافذ کریں گے‘۔

انہوں نے کہا کہ ’اربوں روپے پاکستانی ہر سال مجھے دیتے ہیں لیکن مشکل سے پاکستان میں 4 ہزار ارب ٹیکس اکٹھا ہوتا ہے، میں پاکستان سے 8 ہزار ارب روپے ٹیکس اکٹھا کرکے دکھاؤں گا، ہم سادگی اختیار کریں گے، بڑے گورنر ہاؤس پبلک کیلئے رکھیں گے، کبھی بھیک نہیں مانگنا پڑے گی، قرض نہیں لینا پڑے گا‘۔

چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ ’چار ہفتے رہ گئے ہیں، ملک کا مستقبل بدلنے لگا ہے، نوجوانوں اللہ نے ملک کی تقدیر بدلنے کا موقع دیا ہے، ہار جیت اللہ کے ہاتھ میں ہے، میں اللہ کا شکر ادا کرتا ہوں، اللہ شکر ہے تو نے ظالموں اور چوروں سے ملک بچانے کا موقع دیا‘۔

عمران خان نے کہا کہ ’دعا کریں، یا اللہ اس جماعت کو جتادے جو قوم کی قدر کرے، اللہ انہیں کامیابی دے جو ملک میں انصاف لائے، ظالموں کو جیل میں ڈالے، اللہ انہیں کامیابی دے جو ملک کو غربت سے نکالے‘۔

انہوں نے کہا کہ ’پانی کا مسئلہ آرہا ہے، کسی نے بندوبست نہیں کیا، دعا کریں وہ جماعت آئے جو ملک کو پیروں پر کھڑا کرے، اللہ کبھی وہ لیڈر نہ دے جس کے پیسے باہر ہوں،اللہ وہ لیڈر دے جس کا جینا مرنا پاکستان میں ہو، ایسا لیڈر ہو جو اپنا علاج بھی سرکاری اسپتال میں کرائے۔

اپنے خطاب میں عمران خان نے کہا کہ الیکشن 2018 کے لیے پوری کوشش کی کہ میرٹ پر ٹکٹ دیے جائیں، جن لوگوں کو ٹکٹ نہیں ملے ان کے دکھ کا احساس ہے، ان سے معذرت چاہتا ہوں۔

عمران خان نے کہا کہ آج پاکستان میں سب سے بڑی جماعت تحریک انصاف ہے، پاکستان کو ایسا بنائیں گے کہ باہر سے لوگ نوکریاں ڈھونڈنے آئیں گے، 2002 میں وعدہ کیا تھا کہ صرف میانوالی کو نہیں پورے ملک کو بدلیں گے۔

پاکستان تحریک انصاف کے ٹکٹوں کی تقسیم پر ہونے والے تنازع کے حوالے سے عمران خان نے کہا کہ ٹکٹوں کیلیے بڑا پریشر تھا،سارے ٹکٹ مانگ رہے تھے، میانوالی میں میرے رشتہ دار سارے ٹکٹ مانگ رہے تھے، شریف خاندان کے سارے لوگوں کو ٹکٹ مل گئے، نواز شریف اور زرداری کے تمام رشتہ داروں کو ٹکٹ دیا گیا لیکن تحریک انصاف میں صرف میرٹ پر ٹکٹ ملیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ جن کو ٹکٹ نہیں ملے ان سے معذرت چاہتاہوں، میرٹ پر ٹکٹ دینے کی کوشش کی،انسان ہوں غلطی ہو سکتی ہے، ساڑھے 4 ہزار لوگوں نے ٹکٹوں کیلئے درخواست کی تھی۔

عمران خان نے پاکستان مسلم لیگ ن کی اعلیٰ قیادت اور رہنماؤں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ کیا شہباز شریف بجلی بنا کر شاپنگ بیگ میں لے کر چلے گئے۔

انہوں نے کہا کہ ’احسن اقبال بڑی معتبر باتیں کرتے تھے کہ ہم تجربہ کار ٹیم لائیں گے، ہم ملک کے مسئلے حل کریں گے، احسن اقبال تمارے پاس، چوری، کرپشن، جھوٹ بولنے والی تجربہ کار ٹیم تھی‘۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ ’پاکستان کی تاریخ میں کبھی اتنا قرضہ قوم پرنہیں ہوا،جتنا یہ دونوں بھائی کرکے گئے ہیں،5 سال میں پاکستان کا قرضہ 13 ہزار سے 27 ہزار ارب پہنچ گیا ہے، جون 2013 میں ڈالر ایک سو روپے کا تھا، جو اب 125 روپے کا ہو گیا ہے‘۔

عمران خان نے حکمراںوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ ’قوم غریب اور حکمران امیر ہو گئے ہیں، ان کے باہر اثاثے،لندن میں فلیٹس ہیں‘۔

چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ ’شریف برادران اور احسن اقبال ایک ادارہ بتائیں جو انہوں نے ٹھیک کیا ہو، اسٹیل مل چل رہی تھی،ان کے دور میں بند ہوئی،10 سال میں انہوں نے ملک کو کنگال کر دیا ہے‘۔

عمران خان نے کہا کہ نواز شریف اور ان کے بیٹوں نے 300 ارب ڈالر کا جواب دینا ہے۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری