ایف بی آر نے برطانیہ میں پاکستانیوں کی غیر منقولہ جائیدادوں کا ڈیٹا حاصل کرلیا

فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے برطانیہ میں پاکستانیوں کی غیر منقولہ جائیدادوں سے متعلق معلومات حاصل کرلی۔

ایف بی آر نے برطانیہ میں پاکستانیوں کی غیر منقولہ جائیدادوں کا ڈیٹا حاصل کرلیا

خبر رساں ادارے تسنیم نے سرکاری خبر رساں ایجنسی ’اے پی پی‘ کے حوالے سے بتایا ہے کہ ایف بی آر کے بیان میں کہا گیا کہ یہ معلومات اقتصادی تعاون اور ڈویلپمنٹ تنظیم (او ای سی ڈی) اور برطانیہ کی ٹیکس انتظامیہ کی معاونت سے حاصل کی گئی۔

بیان میں کہا گیا کہ بورڈ، معلومات کا جائزہ لینے کے بعد مزید کارروائی کا فیصلہ کرے گا۔

پاکستان نے ستمبر 2016 میں ٹیکس معاملات سے متعلق مشترکہ انتظامی معاونت، جبکہ جون 2017 میں میثاق ٹیکس پر عملدرآمد سے متعلق کثیر فریقی معاہدے (بی ای پی ایس) اور مالی اکاؤنٹس کے آٹومیٹک تبادلے (ایم سی اے اے) کے معاہدے میں دستخط کیے تھے۔

حکومت پاکستان نے چند ماہ قبل ہی ملکی اثاثوں کو سامنے لانے کے ایکٹ 2018 اور غیر ملکی اثاثوں کو سامنے لانے اور ان کی ملک میں واپسی کے ایکٹ 2018 کے تحت ایمنسٹی اسکیم کا اعلان کیا تھا، جسے بےمثال رسپانس ملا۔

ایف بی آر کے بیان میں کہا گیا کہ اسکیم سے فائدہ اٹھاتے ہوئے 55 ہزار 225 افراد نے اپنے اثاثے ظاہر کیے، جن میں 577 ارب روپے مالیت کے غیر ملکی اثاثے اور ایک ہزار 192 ارب روپے مالیت کے مقامی اثاثے شامل ہیں۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری