عراقی حکام کا امریکی پابندیوں کے بعد بھی ایران کیساتھ اﺳﭩﺮیٹجیک پارٹنرشپ برقرار رکھنے پر تاکید

نہ فقط عراق کی سیاسی و مذہبی شخصیات نے ایران کے ساتھ روابط مزید مضبوط بنانے کا بار بار عندیہ دیا ہے بلکہ اس ملک کے صدر نے بھی آج ایک بار پھر کہدیا کہ عراق کیلئے ایران کیخلاف امریکی پابندیوں پر عمل دشوار ہے۔

عراقی حکام کا امریکی پابندیوں کے بعد بھی ایران کیساتھ اﺳﭩﺮیٹجیک پارٹنرشپ برقرار رکھنے پر تاکید

خبر رساں ادارے تسنیم کے مطابق عراق نے کہا ہے کہ وہ ایران کے ساتھ ہے۔

عراق کی قد آور سیاسی اور مذہبی شخصیت اور قومی تحریک حکمت کے صدر سید عمار حکیم نے بغداد میں قومی تحریک حکمت کے اراکین اور عہدیداروں کے ساتھ ہونے والی ملاقات میں کہا کہ ایران ہمارا اﺳﭩﺮیٹیجک پارٹنر ہے لہذا اس کا ساتھ دینا ہمارا دینی اور اخلاقی فرض ہے.

سید عمار حکیم نے ایران کے خلاف امریکہ کے معاشی دباؤ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ آج اسلامی جمہوریہ ایران کو دباؤ اور پابندیوں کا سامنا ہے جس کا مقصد ملک میں سیاسی نظام کو نشانہ بنانا ہے.

انہوں نے کہا کہ ایران نے ہمیشہ ہر بحران میں عراق کا ساتھ دیااس لئے عراق بھی ایران  کے ساتھ ہے۔

سید عمار حکیم کا کہنا تھا کہ ایران اپنی بہترحکمت عملی بالخصوص باصلاحیت قیادت کی بدولت تمام مشکلات پر قابو پانے میں کامیاب ہوگا۔

واضح رہے کہ عراق کے صدر فواد معصوم نے بھی آج اپنے بیان میں کہا ہے کہ ان کے ملک کیلئے ایران کیخلاف پابندیوں پر عمل درآمد ایک دشوار کام ہے۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی ایران خبریں
اہم ترین ایران خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری