پنجاب میں دینی مدارس کے طلباء و طالبات سے بیان حلفی لیا جائے گا

پنجاب حکومت نے نیشنل ایکشن پلان کے تحت صوبے بھر میں قائم دینی مدارس میں زیر تعلیم ملکی و غیر ملکی طلباءو طالبات کی از سر نو جانچ پڑتال کا فیصلہ کیا ہے۔ طلباء اور ان کے والدین سے از سر نو بیان حلفی لیا جائے گا کہ ان کا یا ان کے بچوں کا کسی بھی کالعدم مذہبی جماعت یا تنظیم سے نا کوئی تعلق رہا، نہ ہے اور نہ ہوگا۔ از سر نو بیان حلفی نہ دینے والے طلباء و طالبات کو مدراس سے فارغ کر دیا جائے۔

پنجاب میں دینی مدارس کے طلباء و طالبات سے بیان حلفی لیا جائے گا

 

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، پنجاب حکومت نے نیشنل ایکشن پلان کے تحت صوبے بھر میں قائم دینی مدارس میں زیر تعلیم ملکی و غیر ملکی طلباء و طالبات کی ازسر نو جانچ پڑتال کا فیصلہ کیا ہے۔

دوسری جانب پنجاب حکومت نے صوبے میں دینی مدارس میں تعلیم حاصل کرنے والے ایسے غیر ملکی طلباء و طالبات کو ملک بدر کرنے کا فیصلہ بھی کیا ہے جن کے ویزوں کی معیاد ختم ہو چکی ہے یا ہونے والی ہے۔

پنجاب حکومت کے ایک حساس ادارے نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ لاہور میں 375 سے زائد غیر ملکی طلباء کے ویزے کی معیاد ختم ہو چکی ہے، گجرات میں 47 ، راولپنڈی میں 50، چکوال میں 29 ، ساہیوال میں 21، قصور میں 33، گوجرانوالہ میں 75 ، اٹک میں 67، فیصل آباد میں 55، بھکر میں 39 ، ڈی جی خان میں 75 اور راجن پور میں 39 غیر ملکی طلبا کے ویزوں کی معیاد ختم ہوچکی ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان کے دینی مدارس میں افغانستان سمیت مختلف ممالک کے طلاب قانونی اور غیرقانونی طور پر تعلیم حاصل کررہے ہیں۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری