کراچی: سیکیورٹی فورسز نے صفورہ بم دھماکے کا مرکزی ملزم گرفتارکرلیا

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارروائی میں کالعدم تنظیم القاعدہ برصغیر سے تعلق رکھنے والے ہائی پروفائل دہشت گرد کو گرفتار کرلیا گیا۔

کراچی: سیکیورٹی فورسز نے صفورہ بم دھماکے کا مرکزی ملزم گرفتارکرلیا

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارروائی میں کالعدم تنظیم القاعدہ برصغیر سے تعلق رکھنے والے ہائی پروفائل دہشت گرد عمر جلال چانڈیو عرف کاٹھیو کو کراچی کے علاقے گلشنِ اقبال سے گرفتار کیا گیا۔

ڈان نیوز کے مطابق سندھ کے شہر میرپور خاص سے تعلق رکھنے والا ملزم جلال چانڈیو کوٹری میں طاہر منہاس عرف سائیں کے پڑوس میں رہائش پذیر تھا۔

واضح رہے کہ طاہر منہاس 2015 میں ہونے والے صفورہ بم دھماکے کا مرکزی ملزم ہے جس کے نتیجے میں اسماعیلی برادری کے 47 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔

طاہر منہاس کو 2015 میں انسدادِ دہشت گردی کے ادارے (سی ٹی ڈی) نے دیگر عسکریت پسندوں کے ہمراہ گرفتار کرلیا تھا۔

سانحہ صفورہ پر بنائی گئی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کی تفتیشی رپورٹ میں یہ انکشاف ہوا تھا کہ القاعدہ برصغیر کے سابق امیر عبدالرحمٰن کے 2001 میں کراچی سے گرفتار ہونے کے بعد جلال چانڈیو کو مقامی امیر بنایا گیا تھا۔

جے آئی ٹی کے مطابق جب طاہر منہاس القاعدہ برصغیر سے منسلک ہوا تو جلال چانڈیو نے اسے کراچی منتقل ہونے کا کہا۔

2015 میں ایک پریس کانفرنس میں اس وقت کے سی ٹی ڈی کے چیف راجہ عمر خطاب نے بتایا تھا کہ جلال القاعدہ کے عرب نیٹ ورک سے منسلک ہے جبکہ حاجی صاحب (فرضی نام) کراچی اور بلوچستان کے علاقے وڑھ میں سرگرم تھا۔

جہاں یہ عسکری گروہ جو زیادہ تر بلوچ نوجوانوں پر مشتمل ہے اور اغوا برائے تاوان، دہشت گردی اور نیٹو کنٹینرز پر حملوں میں ملوث تھا۔

سیکیورٹی ذرائع نے دعویٰ کیا کہ جلال چانڈیو کی اہلیہ بھی القاعدہ برصغیر کی سرگرم رکن ہے۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری