این اے 91 کے 20 پولنگ سٹیشنزمیں ٹمپرنگ ثابت ہوگئی

الیکشن کمیشن نے این اے 91کے 20 پولنگ سٹیشنز میں ٹمپرنگ ثابت ہونے کے بعد 20 پولنگ سٹیشنز میں 2 فروری کو دوربارہ پولنگ کا حکم جاری کر دیا ہے اور ڈائریکٹرپولیٹیکل فنانس علیم شہاب ڈی آراومقررکر دیا ہے ۔

این اے 91 کے 20 پولنگ سٹیشنزمیں ٹمپرنگ ثابت ہوگئی

تسنیم خبررساں ادارے کے مطابق، این اے 91 میں ن لیگ کے ذوالفقار بھٹی نے تحریک انصاف کے امیدوارعامرسلطان چیمہ کو شکست دے کر میدان مارلیا تھا تاہم جیت کا مارجن کم ہونے کے باعث کامیاب ہونے والے ن لیگی رہنما ذولفقار بھٹی نے الیکشن کمیشن میں دوبارہ گنتی کی درخواست دی تھی ۔

جس کے بعد 20 پولنگ سٹیشنوں کے تھیلوں کی سیلیں ٹوٹی ہونے اور پانچ پولنگ سٹیشنز کے تھیلے غائب ہونے کا انکشا ف ہوا جس پر ڈائریکٹر الیکشن کمیشن پنجاب کی سربراہی میں تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی گئی تھی۔

ٹیم نے سرگودھا پہنچ کر مفصل تحقیقات کے ساتھ درجنوں ملازمین سے پوچھ گچھ بھی کی تھی۔ سرگودھا کے حلقہ این اے 91 کے کل 20 پولنگ اسٹیشنز میں دھاندلی کا ہونا ثابت ہوگیا ہے۔

حلقہ این اے 91 کے کل 20 پولنگ اسٹیشنز کے ووٹ ٹیمپر کیے گئے ہیں۔اس لیے الیکشن کمیشن نے ان 20 پولنگ اسٹیشنز پر دوبارہ الیکشن کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری