گلگت بلتستان: غیرملکی نے 90ہزار ڈالرز کے عوض مارخورکا شکار کرلیا


گلگت بلتستان: غیرملکی نے 90ہزار ڈالرز کے عوض مارخورکا شکار کرلیا

گلگت بلتستان کے ضلع استور میں امریکی شہری نے 90ہزار ڈالرز کے عوض مار خور کا شکار کرلیا۔

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، سیکریٹری جنگلات آصف اللہ خان کے مطابق یہ رواں سیزن کا مارخور کا چوتھا اور آخری شکار تھا۔

انہوں نے مارخور کے چاروں شکار کے بارے میں بتایا کہ آخری والا شکار سب کم یعنی 90ہزار ڈالرز میں ہوا۔

سیکریٹری جنگلات کے مطابق سیزن کا پہلا شکار 1لاکھ 10ہزار ڈالرز، دوسرا 1 لاکھ ڈالرز، تیسرا 1 لاکھ 5ہزار ڈالرز اور چوتھا یعنی آخری 90ہزار ڈالرز میں کیا گیا۔

آصف اللہ خان کے مطابق مارخور کے شکار سے ہونے والی آمدن کا 20 فیصد حصہ حکومت اور 80 فیصد کمیونٹی پر دیا جاتا ہے۔

سکریٹری جنگلات کے مطابق سیزن کا آخری شکار امریکی شہری مسٹر جم نے 90ہزار ڈالرز کے عوض کیا،جو آخری تھا،اس سے پہلے گلگت بلتستان کے مختلف علاقوں میں 3 اور مارخور کے شکار ہوچکے تھے۔

سیکریٹری جنگلات نے بتایا کہ جوٹیال گلگت میں ایک لاکھ 10 ہزار ڈالر، دوسرا بونجھی استور میں ایک لاکھ ڈالر جب کہ تیسرا حراموش گلگت میں ایک لاکھ 5 ہزار ڈالر میں شکار ہوچکے ہیں۔

اس سے قبل مارخور کا شکار کرنے والے امریکی شہری برائن کنسل ہارلن نے پرمٹ کی مد میں ایک لاکھ10 ہزار امریکی ڈالر یعنی ایک کروڑ 52 لاکھ روپے ریکارڈ فیس ادا کی جو کہ پرمٹ کی مد میں ادا کی گئی اب تک کی سب بڑی رقم ہے۔

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری