مہلک وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے ٹیسٹ کی صلاحیت بڑھائی جارہی ہے، اسد عمر


مہلک وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے ٹیسٹ کی صلاحیت بڑھائی جارہی ہے، اسد عمر

اسد عمرکا کہنا ہےکہ ملک بھر میں اس مہلک وائرس کا پھیلاؤ روکنے کے لیے 30 ہزار ٹیسٹ روزانہ کرنے کی صلاحیت اطمینان بخش ہے۔

تسنیم خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق، پاکستان میں کورونا وائرس کیسز 41 ہزار سے تجاوز کر چکے ہیں وہیں وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر کا کہنا ہے کہ اس وقت ہمارے پاس 25 ہزار ٹیسٹ روزانہ کرنے کی صلاحیت ہے جس میں ہر گزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہورہا ہے۔
اسد عمر کا کہنا تھا کہ ہمیں امید ہے کہ رواں ماہ کے اواخر یا آئندہ ماہ کے اوائل سے ہم 30 ہزار ٹیسٹ روزانہ کرنے کے قابل ہوں گے۔
ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ملک بھر میں روزانہ کی بنیاد پر 14 ہزار ٹیسٹ کیے جارہے ہیں لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ملک میں 14 ہزار سے زائد ٹیسٹ نہیں کیے جاسکتے۔
نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے اجلاس کی سربراہی کرنے والے وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ’اس وقت ہم زیادہ تر نمونے تربیتی ہسپتالوں یا پاکستان میں داخل ہونے والے مسافروں سے حاصل کررہے ہیں، ہمیں امید ہے کہ تربیتی ہسپتالوں کے علاوہ دیگر ہسپتال بھی جلد نمونے اکٹھے کر کے بھیجنے کا آغاز کردیں گے جس نے ٹیسٹس کی تعداد بڑھ جائے گی‘۔
انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کی رفتار کا اندازہ لگانے اور اس کے مطابق مستقبل کی حکمت عملی تشکیل دینے کے لیے 30 ہزار ٹیسٹ روزانہ کی تعداد کافی ہے۔
اس سے قبل انہوں نے اعلان کیا تھا کہ (لاک ڈاؤن کے اعلان کے) 2 ماہ کے اندر روزانہ ٹیسٹ کی تعداد 30 گنا بڑھ چکی ہے۔
خیال رہے کہ پاکستان میں مارچ کے وسط تک 500 سے کم ٹیسٹ کیے جارہے تھے لیکن گزشتہ چند روز سے روزانہ 14 ہزار ٹیسٹ کیے جارہے ہیں۔
ملک میں اتوار کے روز ایک ہزار 570 نئے کیسز جبکہ 30 اموات سامنے آئیں جس کے ساتھ ملک میں متاثرین کی تعداد41 ہزار سے تجاوز کر گئی جبکہ 11 ہزار 341 افراد اس سے مکمل صحتیاب ہوچکے ہیں۔
این سی او سی کے اعداد و شمار کے مطابق اس وقت 319 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے اور کووِڈ 19 کے علاج کی سہولت فراہم کرنے والے 735 ہسپتالوں میں 8 ہزار 680 مریض داخل ہیں۔
دوسری جانب اپنے اہلِ خانہ کے ہمراہ اس وائرس سے متاثر ہونے والے قومی اسمبلی کے اسپیکر اسد قیصر نے ایک ویڈیو پیغام میں دعاؤں کے لیے عوام کا شکریہ ادا کیا۔
ان کا کہنا تھا کہ ’میں قوم کا شکرگزار ہوں کہ کیوں کہ ان کی دعاؤں کی وجہ سے میرے اہل خانہ مکمل صحتیاب ہوگئے ہیں، میں صرف اتنا کہنا چاہوں گا کہ ہر شخص کو حکومت کے اعلان کردہ احتیاطی اقدامات پر عمل کرنا چاہیئے اور سماجی فاصلہ اس بیماری سے لڑنے کا بہترین ہتھیار ہے۔
اسد قیصر نے مزید کہا کہ مجھے یقین ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں ہم اس مشکل وقت سے نکل جائیں گے۔
انہوں نے مزید کہا کہ ’پاکستان ہم سب کا ہے اور اس کی ترقی میں اپنا کردار ادا کرنا ہم سب کی اجتماعی ذمہ داری ہے‘۔

 

سب سے زیادہ دیکھی گئی پاکستان خبریں
اہم ترین پاکستان خبریں
اہم ترین خبریں
خبرنگار افتخاری